جی سی یونیورسٹی میں لڑکیوں کو فیل کرنے کی دھمکی دے کر جنسی زیادتی کرنے کا انکشاف

ساہیوال
جی سی یونیورسٹی ساہیوال کیمپس میں لڑکیوں کو فیل کرنے کی دھمکی دے کر جنسی زیادتی کرنے کا انکشاف،کیمپس طالبات نے اپنے ایک وڈیو بیان میں انکشاف کیاہے کہ لڑکیوں کو امتحان میں نمبر لگوانے کے لیے پرنسپل سہیل طارق اپنی جنسی خواہشات پوری کرنے کے لیے مجبور کرتاہے۔ ہو سٹل میں مقیم لڑکیوں کو زیادتی کا نشانہ بنا یا جاتا ہے۔

اس نے اپنی خواہش پوری کرنے لیے فراز حنیف،یونس کھوکھر،محمد سرمد،محمد عارف،میڈم (ر) اور ن پر مشتمل گروہ بنا رکھا ہے جو لڑکیوں کو مجبور کر کے چوہدری سہیل طارق کو پیش کر تے ہیں متاثرہ لڑکی نے الزام لگایا ہے کہ بد کردار فراز حنیف نے اسے زیادتی کا نشانہ بنایا اور اسے فیل کرنے کی دھمکی دی جب میں نے انہیں میڈیا پر جانے کی دھمکی دی تو ایک لاکھ روپے رشوت لے کر میرا سمسٹر کلیر کر دیا متاثرہ طالبات نے اپنے وڈیو بیان میں مزیدکہاکہ انہوں نے چیئر مین نیب،وائس چانسلر اور وزیر اعلی کو درخواستیں دی مگر کسی نے ہمارا ساتھ نہیں دیا، تنگ آکر میڈیا کا سہارا لے رہی ہوں۔انہوں نے وزیر اعلی،وزیر اعظم اور چیف جسٹس پاکستان سے نو ٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں