4 کروڑ میں گھر تعمیر ہونے کے بعد اس میں ایسا کیا تھا کہ مالک کے ہوش اڑ گئے

4 کروڑ میں گھر تعمیر ہونے کے بعد اس میں ایسا کیا تھا کہ مالک کے ہوش اڑ گئے

سڈنی: آسٹریلوی شہر ایڈمنڈسن پارک میں ایک شخص نے اپنے خواب کو عملی جامہ پہنانے کے لیے گھر کی تعمیر پر 4 کروڑ روپے خرچ کیے لیکن جب اس نے گھر بننے کے بعد اسے دیکھا تو اس کے ہوش اڑ گئے۔

یہ واقعہ نیپال کے شہری وشنو آریال کے ساتھ پیش آیا، جو اپنی تمام تر جمع پونجی کے ساتھ اپنا ملک چھوڑ کر آسٹریلیا منتقل ہوئے تھے، انھوں نے دس سال تک بڑی محنت کی اور بچت کرتے رہے، تاکہ ایڈمنڈسن پارک میں اپنی پسند کی جگہ خرید کر اس پر اپنے ’خوابوں کا گھر‘ تعمیر کر سکے۔

بروکر وشنو آریال نے سڈنی کے مضافاتی شہر میں 7 لاکھ آسٹریلوی ڈالرز (4 کروڑ تین لاکھ روپے) خرچ کر کے جب ایک تعمیراتی کمپنی زیک ہومز کے ذریعے اس اراضی پر گھر تعمیر کروایا جسے انھوں نے 3 لاکھ 98 ہزار آسٹریلوی ڈالرز میں خریدا تھا، تو اسے دیکھ کر ان کے پاؤں تلے زمین نکل گئی۔

مالک مکان کو تعمیراتی کمپنی نے 3 سال بعد جو گھر بنا کر دیا وہ آدھا ادھورا تھا، اسے دیکھ کر ہی عجیب سا احساس ہوتا تھا، ایک گھر جو آدھا بنا کر چھوڑ دیا گیا تھا اور بہت ہی عجیب لگ رہا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں